اسلام آباد میں پولن الرجی میں کیوں اضافہ ہورہا ہے؟

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں پولن کی مقدار میں روز بہ روز اضافہ جاری ہے جس کی وجہ سے شہری پولن الرجی میں مبتلا ہو رہے ہیں۔

اسلام آباد میں پولن الرجی میں کیوں اضافہ ہورہا ہے؟

اسلام آباد میں 12 ایسے درخت پائے جاتے ہیں جوپولن الرجی کے پھیلاؤ کاباعث بنتے ہیں اور ان کی نشوونما بھی بہت تیزی سے ہوتی ہے۔

پولن الرجی کے پھیلاؤ کا باعث  بننے والے درختوں میں بلیک میلبری اور وائلڈ میلبری سب سے زیادہ خطرناک ہیں۔ 

موسم بہار میں جب درختوں پرپھول پتے کھلنا شروع ہوتے ہیں تو ان سے نکلنے والے ذرات ہوا میں پھیل جاتے ہیں اور سانس کے ذریعے انسانی جسم میں داخل ہوکر الرجی کا باعث بنتے ہیں۔

ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ اسلام آباد ڈاکٹر حسن عرو ج  کا کہنا ہے کہ پولن انسانی جسم میں مختلف طر ح ری ایکٹ کرتی ہے، جیسے آنکھوں میں پانی آنا، نزلہ زکام، مسوڑھے سوج جانا اور آگے جا کر استھما بھی بن جاتا ہے۔

ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ پولن الرجی کے مریض ماسک کا استعمال یقینی بنائیں اور غیر ضروری سفر سے پرہیز کریں جب کہ گھرکی کھڑکیاں اور دروازے بند رکھیں۔

What's Your Reaction?

like
0
dislike
0
love
0
funny
0
angry
0
sad
0
wow
0