2 معصوم بچوں کو زندہ جلانے والی سنگدل ماں کا بیان سامنے آگیا

لاہور: مانگا منڈی میں دو معصوم بچوں کو زندہ جلانے والی سنگدل ماں کا ویڈیو بیان سامنے آ گیا۔

2 معصوم بچوں کو زندہ جلانے والی سنگدل ماں کا بیان سامنے آگیا

ملزمہ تنزیلہ نے اپنے ہی 2 بیٹوں، 3 سالہ فیضان اور 2 سالہ عبدالرحمان کو زندہ جلا دیا تھا اور خوش قسمتی سے  5 سالہ اذان بچ گیا جس نےہولناک واقعے کے تمام مناظر پولیس کو بتا دیے۔

ملزمہ تنزیلہ نے جب دیکھا کہ اب حقیقت چھپ نہیں سکتی تو اس نے اعتراف جرم کر لیا۔

ویڈیو بیان میں ملزمہ نے الزام لگایا کہ سسرال والوں نے زندگی تنگ کر دی تھی، ماں باپ کے بعد بچوں کا کوئی وارث نہیں بنتا، اس لیے بچوں کو آگ لگائی، ملزمہ کی خالہ زاد بہن نے کمرے میں لگی آگ دیکھ کر اسے بچانے کی کوشش کی۔ 

ایف آئی آر میں ملزمہ کے سسر غلام رسول نےالزام لگایا کہ اس کی بہو تنزیلہ کا اپنے شوہر سے لڑائی جھگڑا رہتا تھا جس پر تنزیلہ نے گھر کو آگ لگائی۔

 پولیس کا کہنا ہے کہ معصوم بچے اذان کا بیان حقائق سامنے لانے میں معاون ثابت ہوا۔

What's Your Reaction?

like
0
dislike
0
love
0
funny
0
angry
0
sad
0
wow
0